سینٹ انتخابات ۔ سپریم کورٹ نے اپنا فیصلہ سنا دیا - Public News - Justwatch.pk

سینٹ انتخابات ۔ سپریم کورٹ نے اپنا فیصلہ سنا دیا

سینٹ انتخابات ۔ سپریم کورٹ نے اپنا فیصلہ سنا دیا
سینٹ انتخابات ۔ سپریم کورٹ نے اپنا فیصلہ سنا دیا

 

آج چیف جسٹس آف پاکستان پاکستان جناب گلزار احمد صاحب کی سربراہی میں فاضل بینچ نے انتخابات میں اوپن بیلٹ کے حوالے سے دائر درخواست پر سماعت کی ۔

 

جس میں پیپلزپارٹی کے سینیٹر رضا ربانی نے سپریم کورٹ میں اپنے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ عارضی قانون سازی کے ذریعہ سینٹ کا الیکشن ممکن نہیں رہا۔ سیاسی معاملات میں سمجھوتے ہوتے رہتے ہیں اور پاکستان کے آئین میں کہیں نہیں لکھا کہ سینٹ الیکشن کیلئے اوپن ووٹنگ ہوگی۔

 

اور حکومت نے جو بدنیتی پہ آرڈیننس جاری کیا ہے اس کی معیاد 120 دن میں ختم ہوجائے گی۔ اور اگر اس آرڈیننس کے خلاف کوئی قرارداد کسی بھی ایوان میں منظور ہوتی ہے تو آرڈینس ختم ہوجائے گا۔

 

چیف جسٹس آف پاکستان نے کہا کہ ہم حکومتی آرڈینس پہ کوئی بات نہیں کرنا چاہتے۔ اور نہ ہی کوئی رائے قائم کرنا چاہتے ہیں۔ جمہوری نظام میں قانون کو پاس کرنے کا حق پارلیمنٹ کا ہوتا ہے۔

 

تمام وکلاء کے دلائل مکمل ہونے بعد کہا ہے کہ عدالت نے یہ تعین کرنا ہے کہ سینٹ الیکشن پر آرٹیکل 226 کا اطلاق ہوتا ہے یا نہیں۔ اور ساتھ ہی انھوں نے ریمارکس دیے کہ ہر ادارے کو اپنی حدود میں ہی رہ کر کام کرنا چاہئے۔ 

 

سپریم کورٹ کا کام قانون پہ اپنا فیصلہ دینا ہے نہ قانون کو بنانا۔ سپریم کورٹ پارلیمنٹ کا متبادل نہیں ہے اس لئے پارلیمنٹ کو ہی یہ فیصلہ کرنا ہے خفیہ ووٹنگ ہونی چاہئے یا نہیں۔ اور اگر آئین میں یہ بات تحریر ہے کہ ووٹنگ خفیہ ہوگی تو بات یہیں پہ ختم ہوجاتی ہے۔

 

 

کوئی تبصرے نہیں: